قومی ٹیسٹ ٹیم کو وقت سے پہلے آسٹریلیا بھیجنے کا فیصلہ

قومی ٹیسٹ ٹیم کو وقت سے پہلے آسٹریلیا بھیجنے کا فیصلہ

پاکستان کرکٹ بورڈ نے آسٹریلیا کی تیز اور باؤنسی پچوں پر پریکٹس دینے کے لئے قومی ٹیسٹ ٹیم کو ٹی 20 ٹیم کے ساتھ آسٹریلیا بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ آسٹریلوی پچوں پر بیٹسمین ایڈجیسٹ کرسکیں، کیونکہ دنیا کے زیادہ تر بیٹسمین آسٹریلیا میں مشکلات سے دوچار ہوتے ہیں۔

پاکستانی ٹیم کا کیمپ پرتھ میں لگایا جائے گا، پاکستانی ٹیسٹ ٹیم 3ہفتے پہلے آسٹریلیا پہنچے گی۔

پاکستان ٹیسٹ ٹیم ٹی 20 اور پاکستان اے ٹیم کے ساتھ پرتھ جائے گی ،اس فیصلے کا مقصد بیٹسمینوں کو اچھی پریکٹس فراہم کرنا ہے تاکہ پاکستانی بیٹسمین آسٹریلوی پیس اٹیک کا مقابلہ کرسکیں۔ یہ پہلا موقع ہے کہ آسٹریلیا میں کیمپ لگا کر ٹیسٹ ٹیم کو پریکٹس کرائی جائے گی۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان رواں سال نومبر میں 3 ٹی 20 انٹرنیشنل میچ ہوں گے۔ ٹی 20 میچ سڈنی، کینبرا اور پرتھ میں ہوں گے۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پہلا ٹیسٹ وولن گابا برسبین میں 29 نومبر کو ہوگا جبکہ دوسرا ٹیسٹ ایڈیلیڈ اوول میں ہوگا ،یہ ٹیسٹ ڈے اینڈ نائٹ ہوگا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی سی بی ایم ڈی وسیم خان نے اس سلسلے میں کافی ہوم ورک کیا ہے اور بیٹسمینوں کو خاص طور پر مشکلات سے بچانے کے لئے انہیں وقت سے پہلے بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم اس سال ستمبر اکتوبر میں سری لنکا کے خلاف ہوم گراؤنڈ پر 2 ٹیسٹ میچ کھیلے گی۔

آسٹریلیا کے خلاف 2 ٹیسٹ میچوں کے بعد اگلے سال پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان بھی 2 ٹیسٹ ہوں گے۔

آئندہ سال جولائی میں پاکستانی ٹیم انگلینڈ میں 3ٹیسٹ کھیلنا چاہتی ہے۔ چونکہ اگلے سال آسٹریلیا میں ٹی 20 ورلڈ کپ ہونا ہے اس لئے پاکستانی ٹیم نے 15 ماہ میں 25 سے زائد میچ کھیلنا ہیں جس میں ٹی 20 ایشیا کپ بھی شامل ہے۔

x

Check Also

دستبردار نہیں ہونگا آپ ڈراپ کر دیں

دستبردار نہیں ہونگا آپ ڈراپ کر دیں

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سرفراز احمد نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) ...

%d bloggers like this: