تین آنکھوں والا سانپ

 آسٹریلیا میں دنیا بھر کے نایاب ترین سانپ پائے جاتے ہیں لیکن حال ہی میں ایک چھوٹے سے علاقے میں تین آنکھوں والا سانپ دریافت ہوا جس کی خبروں نے دنیا بھر میں جگہ بنائی ہے۔

آسٹریلیا کے شمال میں ہمپٹی ڈُو نامی ایک علاقہ ہے جہاں مشہور کارپیٹ پائتھن ملا ہے جسے دیکھ کر پہلے خیال کیا گیا کہ شاید یہ دو سروں والا سانپ ہے جس کی تصدیق کے لیے سانپ کا ایکس رے لیا گیا۔

ایکسرے سے معلوم ہوا کہ سانپ کے دو سر بن رہے تھے جو کسی مرحلے پر باہم پیوست ہوگئے اور اس کے بعد سر کے عین درمیان تیسری آنکھ اگ آئی ۔ ناردرن ٹیریٹری پارکس اینڈ وائلڈ لائف نے اپنی فیس بک پوسٹ پر بتایا کہ اس کی تیسری آنکھ عین اس وقت بن گئی تھی جب سانپ انڈے میں جنین (ایمبریو) کے مرحلے پر تھا۔ لیکن یہ کسی ماحولیاتی وجہ سے نہیں بلکہ قدرتی طور پر ہوا ہے اور سانپوں میں ایسا ہوتا رہتا ہے۔

مارچ میں دریافت ہونے والا یہ سانپ چند ہفتوں بعد ہی عہدِ طفولیت میں مرچکا ہے۔ سانپوں کے ماہرین کے مطابق اس کیفیت میں وہ کھانے سے معذور تھا جسے مشکل سے کھلایا پلایا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکا۔

x

Check Also

ترکمانستان میں کورونا وائرس کا نام لینے پر بھی پابندی

ترکمانستان میں کورونا وائرس کا نام لینے پر بھی پابندی

وسطی ایشیائی ریاست ترکمانستان میں کورونا وائرس کے نام لینے پر بھی پابندی عائد کردی ...

%d bloggers like this: