شمالی کوریا نے شارٹ رینج کے 2 میزائلوں کا تجربہ کیا، جنوبی کوریا

شمالی کوریا نے شارٹ رینج کے 2 میزائلوں کا تجربہ کیا، جنوبی کوریا

پیانگ یانگ اور واشنگٹن میں جوہری مذاکرات ڈیڈلاک کا شکار ہونے کے بعد جنوبی کوریا کی فوج کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا نے کم فاصلے پر ہدف کو نشانہ بنانے والے 2 میزائلوں کا تجربہ کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ‘اے ایف پی’ کی رپورٹ کے مطابق سیول کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ میزائلوں کو جنوبی پیونگان صوبے سے مشرق کی جانب سمندر میں فائر کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘میزائلوں نے 370 کلومیٹر کا فاصلہ 90 کلومیٹر کی بلندی کو چھوتے ہوئے طے کیا’۔

انہوں نے مزید کہا کہ ‘ہم چاق و چوبند ہیں اور مزید میزائل فائر کیے جانے کے خدشے کے پیش نظر صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں’۔

دوسری جانب واشنگٹن میں ٹرمپ انتظامیہ کے سینئر حکام کا کہنا تھا کہ ‘امریکا صورتحال کا مستقل جائزہ لے رہا ہے اور جاپان اور جنوبی کوریا میں اپنے اتحادیوں سے مسلسل رابطے میں ہے’۔

واضح رہے کہ 2 اکتوبر کے بعد شمالی کوریا کی جانب سے یہ تازہ میزائل تجربہ ہے۔

2 اکتوبر کو شمالی کوریا نے سمندر سے میزائل فائر کرنے کا تجربہ کیا تھا۔

شمالی کوریا، سویڈن میں امریکا سے مذاکرات سے واپس چلے گئے تھے اور کہا تھا کہ ‘یہ مایوس کن تھے کیونکہ اس میں واشنگٹن کی جانب سے نئے اور بہتر حل فراہم نہیں کیے گئے’۔

واضح رہے کہ پیانگ یانگ پر اس کے جوپری ہتھیاروں اور بیلسٹک میزائل پروگرامز کی وجہ سے کئی عالمی پابندیاں عائد ہیں جس کے بارے میں اس کا کہنا ہے کہ یہ ممکنہ امریکی قبضے سے بچاؤ کے لیے ہیں۔

شمالی کوریا نے پابندیوں میں نرمی کا مطالبہ کیا ہے اور متعدد بار واشنگٹن سے رواں سال کے آخر تک نئی پیشکش لانے کا کہا ہے۔

جنوبی کوریا کے قومی سلامتی کونسل نے آج ہونے والے میزائل تجربے پر تشویش کا اظہار کیا جبکہ جاپان کے وزیر اعظم شنزو آبے نے اس کی مذمت کی اور کہا کہ ‘اس سے ملک اور خطے کے امن و استحکام کو شدید خدشات لاحق ہیں’۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ‘شمالی کوریا نے رواں سال 20 میزائل تجربات کیے ہیں، یہ بات واضھ ہے کہ وہ اپنی میزائل ٹیکنالوجی کو بہتر بنانا چاہتے ہیں’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘یہ نہایت ضروری ہے کہ ہم اپنی سیکیورٹی نگرانی کو مزید مضبوط کریں’۔

جاپان کے وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کی جانب سے ‘بیلسٹک میزائل’ فائر کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار داد کے مطابق پیانگ یانگ پر بیلسٹک میزائل فائر کرنے پر پابندی عائد ہے۔

x

Check Also

طالبان قیدیوں کا غیر ملکی پروفیسرز کے ساتھ تبادلہ مؤخر

افغان حکومت کے عہدیدار نے بتایا ہے کہ 2 مغربی مغویوں کا 3 طالبان قیدیوں ...

%d bloggers like this: