ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں

پروٹین ویسے تو آپ کی غذا کا اہم ترین حصہ ہونا چاہیے تاکہ آپ کا جسم متحرک اور چست و توانا رہے۔

کچھ افراد وزن کم کرنے کے لیے بھی غذا میں پروٹین کی مقدار کو بڑھانا شروع کر دیتے ہیں کیونکہ جب ہم وزن کم کرنے کی بات کرتے ہیں تو ضرورت سے زیادہ پروٹین والی غذا زیادہ اہم سمجھی جاتی ہے۔

پروٹین کی وجہ سے میٹابولزم کے کام کرنے کی صلاحیت مزید تیز ہوجاتی ہے جو وزن گھٹانے میں بڑی حد تک معاون ثابت ہوتی ہے۔

اسی کی وجہ سے انسان کم کھانا کھا کر زیادہ دیر تک تر و تازہ رہ سکتا ہے۔

پروٹین انسانی جسم میں مسلز کو بہتر کرنے اور انہیں بڑھانے میں بھی معاون ثابت ہوتے ہیں، اور اسی کی وجہ سے ورزش کے شوقین افراد اپنے کھانے میں پروٹین کی بڑی مقدار استعمال کرتے ہیں۔

لیکن کچھ افراد ضرورت سے زائد پروٹین اپنی خوراک میں شامل کر لیتے ہیں جس کے حوالے سے ماہر غذائیت کہتے ہیں کہ یہ صحت کے لیے مختلف طریقوں سے نقصان دہ ہوسکتی ہے۔


وزن بڑھاتا ہے


جی ہاں! اگر مخصوص مقدار میں پروٹین کا استعمال کیا جائے اور مناسب ورزش کی جائے تو وزن میں کمی دکھائی دیتی ہے۔

لیکن جب ضرورت سے زائد پروٹین کا استعمال کرلیا جائے تو وہ وزن کم کرنے کے بجائے اسے بڑھا دیتی ہے۔

اس حوالے سے آپ کو بہت محتاط ہونا ہوگا کہ آپ اپنی دن بھر کی خوراک میں کتنی پروٹین لے رہے ہیں۔

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں


نظام ہاضمہ کی خرابی


زائد مقدار میں پروٹین شامل کرنے سے صرف ون بڑھنے کا مسئلہ نہیں بلکہ یہ نظام ہاضمہ پر بھی اثر انداز ہوتا ہے۔

اگر آپ کو پیٹ کے مسائل یا پھر اس کے پھولا رہنے کی شکایت موصول ہو تو سمجھ جائیں کہ آپ کے جسم کو ضرورت سے زائد پروٹین مل چکی ہے اور اسے گھٹانے کے لیے اس کی مقدار میں کمی لازمی ہے۔

پروٹین کھانے کو مزید بھاری بنادیتی ہے اور اس کی وجہ سے کھانا ہضم کرنے میں مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں


ڈی ہائیڈریشن


زیادہ مقدار میں پروٹین لینے سے آپ کو ڈی ہائیڈریشن یا پانی کی کمی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے جس کی وجہ سے بار بار پیاس بھی لگتی ہے۔

اس صورت میں اپنی کمی کو پورا کرنے کے لیے آپ کو زیادہ سے زیادہ پانی پینا ہوگا۔

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں


گردوں پر اثر


جسم کے دوسرے اعضا کی طرح پروٹین گردوں پر بھی براہ راست اثر کرتی ہے۔

جسم میں موجود اضافی نائیٹروجن گیس سے چھٹکارا حاصل کرنے اور دیگر فضلا کو علیحدہ کرنے کے لیے اسے زیادہ قوت کے ساتھ کام کرنا پڑتا ہے۔

اگر آپ پہلے سے ہی گردوں کے مسائل سے نبرد آزما ہیں تو آپ کو فوری طور پر غذا میں پروٹین کی مقدار کو کم کردینا چاہیے۔

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں


کیلشیئم کی کمی


اسی طرح پروٹین زیادہ مقدار میں لینے کی وجہ سے ہڈیوں کے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ضرورت سے زائد مقدار میں پروٹین لینے کی وجہ سے کیلشیئم کی کمی ہونا شروع ہوجاتی ہے اور اسکی وجہ سے ہڈیوں سے متعلق مسائل پیدا ہونے شروع ہوجاتے ہیں۔

تاہم کیلشیئم پر پروٹین کے اثرات سے متعلق مزید جامع تحقیقات کی ضرورت ہے۔

ضرورت سے زائد پروٹین لینے والے یہ نقصانات دیکھ لیں


نوٹ: یہ ایک معلوماتی تحریر ہے، بہتر غذا سے متعلق اپنے معالج سے رابطہ کریں۔

x

Check Also

عالمی ادارہ صحت نے نئے کورونا وائرس کو عالمگیر وبا قرار دے دیا

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے نئے نوول کورونا وائرس کو عالمگیر وبا قرار ...

%d bloggers like this: