افغانستان کا مسئلہ سیاسی ہے، تمام فریق تحمل سے بات چیت جاری رکھیں: پاکستان

افغانستان کا مسئلہ سیاسی ہے، تمام فریق تحمل سے بات چیت جاری رکھیں: پاکستان

پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے افغان طالبان سے مذاکرات کی منسوخی پر ردعمل دیا ہے۔ 

ترجمان دفترخارجہ کے مطابق پاکستان نے ہمیشہ پر تشدد کاررائیوں کی حوصلہ شکنی اور مذمت کی ہے، پاکستان نے افغان امن عمل میں سہولت کار کا مخلصانہ کردار ادا کیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان حالیہ صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے، ایک بار پھر واضح کرتے ہیں کہ افغانستان کے مسئلے کا حل سیاسی ہے لہٰذا تمام فریقین مذاکرات کی میز پر افغان مسئلے کا سیاسی حل تلاش کریں۔

ترجمان نے بتایا کہ پاکستان مذاکرات کی جلد از جلد بحالی کا خواہاں ہے، تمام فریقین صبر تحمل سے امن عمل کو آگے بڑھائیں۔

یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے افغان طالبان کے ساتھ امن مذاکرات منسوخ کرنے کا اعلان کیا گیا۔

امریکی کی جانب سے امن مذاکرات کی منسوخی کا اعلان ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب فریقین حتمی معاہدے پر پہنچ چکے تھے اور دستخط ہونا باقی تھے۔

افغان طالبان اور امریکی مذاکراتی ٹیم کے درمیان قطر کے دارالحکومت دوحا میں 9 دور ہوئے تھے جس کے بعد ہی فریقین حمتی معاہدے کے قریب پہنچے تھے، امریکی مذاکراتی ٹیم کی قیادت امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان زلمے خلیل زاد نے کی۔

x

Check Also

وفاق کا حکومت سندھ کی درخواست پر آئی جی سندھ کو فوری ہٹانے سے انکار

وفاق کا آئی جی سندھ کو فوری ہٹانے سے انکار

وفاقی حکومت نے حکومت سندھ کی درخواست پر آئی جی سندھ کو فوری ہٹانے سے ...

%d bloggers like this: