ختم نبوت سے متعلق رپورٹ پبلک، انوشے اور زاہد حامد ذمہ دار قرار

ختم نبوت سے متعلق آئینی ترمیم کےمعاملے میں پیش رفت ہوئی ہے۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے راجہ ظفرالحق کمیٹی کی رپورٹ پبلک کرنے کا حکم دے دیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کےجسٹس شوکت عزیزصدیقی نے172 صفحات پرمشتمل تفصیلی فیصلہ تحریرکیا۔راجہ ظفرالحق کمیٹی رپورٹ کےاہم نکات بھی فیصلےکا حصہ ہیں۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں حکم دیا کہ راجہ ظفر الحق رپورٹ پبلک کی جائے ۔ فیصلے کے متن کے مطابق ختم نبوت قانون کےمعاملےکوارکان پارلیمنٹ کی اکثریت اہمیت دینےمیں اورپارلیمنٹ معاملے کی حساسیت سمجھنے میں ناکام رہی۔آئین کےخلاف یہ سازش کرنےوالےکو پارلیمنٹ بےنقاب نہیں کرسکی۔عدالت نے شناختی کارڈ،پاسپورٹ بنوانے،ووٹرلسٹ میں نام ڈلوانےکیلئےمذہب کا حلف نامہ لازمی قراردے دیا۔

کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق چوبیس مئی دوہزار سترہ کو سب کمیٹی میٹنگ میں الیکشن بل زیر بحث آیا۔انوشہ رحمان اور شفقت محمود نے بل کو ری ڈرافٹ کیا۔ میٹنگ میں طےپایا کہ فارم پرانوشہ رحمان نظر ثانی کریں گی۔کمیٹی کےاگلےاجلاس میں انوشہ رحمان نے نظر ثانی شدہ فارم پیش کیا جسے جانچ پڑتال کی ہدایت کے ساتھ منظور کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: