وزیراعلیٰ سندھ کی ایران،افغانستان،اٹلی سے آنے والے مسافروں کی زیادہ جانچ پڑتال کی ہدایت

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ایران، افغانستان، اٹلی اور اس طرح کے دیگر ممالک سے آنے والے مسافروں کی جانچ پڑتال میں زیادہ محتاط رہنے کی ہدایت کردی۔

مراد علی شاہ کی زیر صدارت وزیر اعلیٰ ہاؤس میں کورونا وائرس سے متعلق ٹاسک فورس کا 13واں اجلاس ہوا۔

وزیر اعلیٰ کے مشیر میڈیا کے مطابق اجلاس میں وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ 19 نمونے ٹیسٹ کیے گئے، ان میں سے 9 کی تشخیص مثبت آئی جبکہ 10 کو منفی قرار دیا گیا، اس طرح سندھ میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 15 ہوگئی ہے جس میں کراچی میں 14 اور حیدر آباد میں ایک کیس شامل ہیں۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ لیب ٹیسٹ کے لیے مزید دو نمونے بھیجے گئے ہیں اور ان کے نتائج کا انتظار کیا جارہا ہے، زیر علاج تمام 14 مریض مستحکم ہیں اور صحت یاب ہو رہے ہیں۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ محکمہ صحت سندھ نے مجموعی طور پر 162 لیب ٹیسٹ کروائے ہیں، ان میں سے 147 کو منفی قرار دیا گیا ہے اور 15 کی تشخیص مثبت آئی ہے، جبکہ دو نتائج زیر التوا ہیں۔

مشیر میڈیا نے کہا کہ اجلاس کو بتایا گیا کہ کورونا وائرس کا پہلا مریض صحت یاب ہوکر گھر لوٹ گیا ہے جبکہ دوسرا مریض، جو 67 سال کی عمر کا ہے زیادہ خطرے کا مریض تھا وہ بھی منگل کو صحت یاب ہو گیا ہے اور اُس کا ٹیسٹ منفی آچکا ہے اور کل اس کا دوبارہ ٹیسٹ کیا جائے گا۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ میں اب تک تشخیص ہونے والے کورونا وائرس کے تمام کیسز باہر سے سفر کرکے آنے والے ہیں اور ان میں سے کوئی بھی کیس یہاں رہنے والوں میں تشخیص نہیں ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس کا مطلب یہ ہے کہ ہمیں ہوائی اڈے پر ایران، افغانستان، اٹلی اور اس طرح کے دیگر ممالک سے آنے والے مسافروں کی جانچ پڑتال میں زیادہ محتاط رہنا ہوگا اور مشتبہ افراد کو شہر لانے کے بجائے وہاں قرنطینہ میں رکھنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی ایئرپورٹ پر روزانہ تقریباً 4000 مسافر اترتے ہیں، لہٰذا ان کی اسکریننگ کے انتظامات کو فول پروف بنانا ہوگا۔

مراد علی شاہ نے چیف سیکریٹری کو ہدایت کی کہ وہ وفاقی حکومت سے بات کریں اور ان سے درخواست کی جائے کہ وہ کورونا وائرس کے مشتبہ افراد کے لیے ہوائی اڈے پر قرنطینہ کے انتظامات کریں۔

انہوں نے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ نمونیا یا کورونا وائرس کی علامت والے مسافروں میں سے کسی کو بھی ہوائی اڈے سے باہر نہ لایا جائے اور نہ ہی اسے دوسروں کے سامنے ظاہر کیا جائے۔

چیف سکریٹری نے وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا کہ محکمہ صحت نے ایئرپورٹ پر 32 پیشہ ور افراد کو تعینات کیا ہے، وہ ہوائی اڈے پر صحت کے عملے کو دوگنا کررہے ہیں تاکہ آنے والے ہر مسافر کی صحیح جانچ کی جاسکے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کراچی ایئرپورٹ پر امیگریشن کاؤنٹرز پر ہیلتھ ایجوکیشن اور اسکریننگ ڈیسک قائم کی جائے گی جبکہ محکمہ صحت پروفیشنلز، ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کو عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے ذریعے خصوصی تربیت دے گا۔

x

Check Also

پاکستان کا جوہری ہتھیار لے جانے والے غزنوی کا کامیاب تجربہ

پاکستان کا جوہری ہتھیار لے جانے والے غزنوی کا کامیاب تجربہ

پاکستان نے زمین سے زمین تک مار کرنے والے شارٹ رینج بیلسٹک میزائل غزنوی (حتف ...

%d bloggers like this: