People wearing protective facemasks walk out from a Pakistan-based Chinese company in Islamabad on January 30, 2020, after instructions from Pakistani authorities to take preventive measures against the coronavirus. - A virus similar to the SARS pathogen has killed 170 people and spread around the world since emerging in a market in the central Chinese city of Wuhan. (Photo by Aamir QURESHI / AFP)

کراچی: کورونا وائرس کا پہلا مریض مکمل صحت یاب ہوگیا

کراچی میں سامنے آنے والے پاکستان کے پہلے کورونا وائرس کے مریض صحت یاب ہوگئے ہیں اور انہیں جلد ہسپتال سے گھر بھیج دیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی صدارت میں کورونا وائرس کے ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا جہاں بریفنگ کے دوران آگاہ کیا گیا کہ کورونا وائرس کا جو پہلا متاثرہ نوجوان سامنے آیا تھا وہ صحت یاب ہو گئے ہیں اور کل شام تک ہسپتال سے واپس بھیج دیا جائے گا۔

مراد علی شاہ کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والے نوجوان اور ان کے اہل خانہ کو مبارک باد دی اور کہا کہ یہ ہماری بڑی کامیابی ہے، میں اپنی پوری ٹیم کو بھی مبارک باد دیتا ہوں۔

محکمہ صحت سندھ کی میڈیا کوآرڈینیٹر میران یوسف کا کہنا تھا کہ ‘سندھ میں پہلا کورونا وائرس کا مریض مکمل طور پر صحت یاب ہوگیا ہے اور ہسپتال سے بھی خارج کردیا جائے گا’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘مریض آئیسولیشن میں تھا اور گزشتہ 10 روز سے ان کا علاج چل رہا ہے، اور ان کا تین مرتبہ ٹیسٹ کیا گیا’۔

میران یوسف نے کہا کہ ‘مریض کا تیسرا ٹیسٹ آج صبح کیا گیا تھا جو منفی آیا جس کے بعد حکام اور ہسپتال کی جانب سے کلیئر قرار دیا گیا تھا’۔

انہوں نے کہا کہ ‘وزیراعلیٰ سندھ کی ہدایات کے مطابق مریض کو کل ہسپتال سے ڈسچارج کردیا جائے گا’۔

وزیراعلیٰ سندھ زیر صدارت کورونا وائرس کے ٹاسک فورس کے اجلاس میں صوبائی وزیر صحت، مشیر قانون، چیف سیکریٹری، آئی جی سندھ، وزیراعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری، سیکریٹری داخلہ، سیکریٹری صحت، ڈی جی صحت ایئرپورٹ اور دیگر شریک ہوئے۔

اجلاس کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ کل سامنے آنے والا متاثرہ شہری 12 فروری کو ایران گئے تھے اور 24 فروری کو واپس آئے تھے، ان کے قریبی 15 لوگوں تک پہنچا گیا ہے اور انہیں گھر میں آئسولیشن میں رکھا گیا ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ 5 لوگ جو مریض کے بہت قریب تھے ان کے نمونے ٹیسٹ کے لیے بھیجے گئے تھے جن میں سے 4 ٹیسٹ منفی آئے ہیں اور ایک نتیجہ اب تک نہیں آیا۔

وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ 196 افراد نے مریضوں کے ساتھ سفر کیا ہے، ان سب کا ریکارڈ متعلقہ ضلعی انتظامیہ کے سربراہ کو دیا گیا ہے۔

سندھ میں کورونا وائرس کے حوالے سے اقدامات پر بریفنگ میں بتایا گیا کہ قمبر، نواب شاہ، جیکب آباد اور کراچی سے 13 نمونے ٹیسٹ کے لیے بھیجے گئے تھے اور وہ سب منفی آئے ہیں۔

خیال رہے کہ کراچی میں گزشتہ روز کورونا وائرس کا ایک اور کیس سامنے آگیا تھا جس کے بعد سندھ میں 3 اور پاکستان میں متاثرین کی مجموعی تعداد 6 ہوگئی تھی۔

معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کورونا وائرس کے نئے کیس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‘پاکستان میں کورونا وائرس کے چھٹے کیس کی تصدیق ہوگئی ہے’۔

انہوں نے کہا تھا کہ ‘سندھ میں سامنے آنے والے مریض کی حالت ٹھیک ہے اور ان کا خیال رکھا جارہا ہے’۔

یاد رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری کو کراچی میں سامنے آیا تھا جس کے فوری بعد وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کوئٹہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے دوسرے کیس کی بھی تصدیق کی تھی۔

بعد ازاں 29 فروری کو اسلام آباد میں معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان کے ہمراہ پریس کانفرنس میں ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا تھا کہ پاکستان میں کورونا وائرس کے مزید 2 کیسز سامنے آگئے ہیں اور مجموعی تعداد 4 ہوگئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کا ایک کیس سندھ اور دوسرا وفاق میں رپورٹ ہوا ہے جبکہ پہلے رپورٹ ہونے والے مریض تیزی سے روبصحت ہیں۔

دوسری جانب محکمہ صحت سندھ نے بھی کراچی میں کورونا وائرس کے نئے مریض کی تصدیق کی تھی۔

بعد ازاں 3 مارچ کو وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے پانچویں کیس کی بھی تصدیق کی تھی اور گزشتہ روز چھٹے کیس کی بھی تصدیق ہوگئی تھی۔

x

Check Also

گارڈن میں خاتون ٹک ٹاکرکا تین ساتھیوں سمیت قتل، ملزم کی شناخت

گارڈن میں خاتون ٹک ٹاکرکا تین ساتھیوں سمیت قتل، ملزم کی شناخت

کراچی کے علاقے گارڈن میں خاتون سمیت 4 ٹک ٹاکرز کے قتل کی تحقیقات میں ...

%d bloggers like this: