سعودی عرب:خواتین مخالف قانون پر عمل درآمدمنسوخ

سعودی عرب کی وزارت انصاف نے خواتین مخالف قانون پر عمل درآمد روک دیا ہے۔
عرب اخبار عکاظ نے وزارت انصاف کے معتبر ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ وزارت نے خواتین کے عزت اور وقار کے تحفظ کی خاطر اس قانون پر عمل درآمد روک دیا جس کے تحت شوہروں کو یہ حق دیا گیا تھا کہ وہ اپنی بیویوں کو زبردستی گھر میں رہنے پر مجبور کرسکتے ہیں۔
اخبار کے مطابق وزارت انصاف نے اس دوران خاندانی قوانین کے آرٹیکل 75 کو بنیاد بنایا جو کسی بھی بیوی کو جبرا اور خلاف مرضی گھر میں رہنے پر مجبور نہیں کیا جاسکتا ہے۔
ذرائع کے مطابق نئے قانون کے تحت گھر میں نہ رکنے والی خواتین کے شوہروں کے سامنے دو تجاویز رکھی گئی طلاق یا خلع۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

پاک فوج کا ڈیم فنڈ کیلئے ایک ارب 59لاکھ روپے عطیہ

ڈیموں کیلئے قرض نہیں لیا جائے گا، چف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے بڑا اعلان کر دیا۔ چیف جسٹس نے ...