مریم نواز اہل یا نااہل ؟ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیصلہ سنا دیا

مریم نواز اہل یا نااہل ؟ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیصلہ سنا دیا

الیکشن کمیشن نے مریم نوازشریف کو پارٹی کی نائب صدارت سے ہٹانے کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے  انہیں اہل قرار دیدیا ہے ۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ مریم نوازشریف ن لیگ کی نائب صدر برقرار رہیں گی

چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی تین رکنی بنچ نے محفوظ فیصلہ سنایا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز الیکشن کمیشن میں مریم نواز کو پارٹی عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر سماعت ہوئی تھی۔

،چیف الیکشن کمشنر سردار رضا حیات کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی جس میں مریم نواز کے وکیل بیرسٹر ظفراللہ الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے

،چیف الیکشن کمشنر نے استفسار کیا کہ پی ٹی آئی پارٹی الیکشن چیلنج ہواتھا، اس کا کیا نتیجہ نکلا؟۔ کیا اس میں ہم نے کہا تھا کہ یہ ہمارے دائرہ کارمیں نہیں آتا؟۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ پارٹی میں نائب صدرکے اختیارات کے بارے میں آگاہ کریں۔

وکیل ن لیگ نے کہا کہ ن لیگ میں نائب صدرکے پاس کوئی اختیارنہیں، اعزازی عہدہ ہے۔

پی ٹی آئی کے وکیل حسن مان نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ واضح طور پر کہہ چکی ہے نااہل،سزا یافتہ شخص پارٹی صدارت نہیں رکھ سکتا۔

ممبر خیبرپختونخواارشاد قیصر نے کہاکہ سپریم کورٹ کا فیصلہ الیکشن ایکٹ کے نافذ ہونے سے پہلے کا ہے، الیکشن ایکٹ میں نااہل سزا یافتہ شخص پر پارٹی صدارت یا عہدہ رکھنے کی ممانعت نہیں۔

وکیل پی ٹی آئی نے کہا کہ سپریم کورٹ نے الیکشن ایکٹ کی شق203کوآرٹیکل63،62 اے کے ساتھ پڑھنے کاکہاہے۔

پی ٹی آئی سنٹرل پنجاب کے صدر رائے حسن نواز کو ان ہی گراونڈز پر نااہل کیا گیا، وکیل پی ٹی آئی حسن مان نے کہا کہ مریم نواز سزا یافتہ ہیں پارٹی عہدہ رکھنے کےلئے اہل نہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چار اراکین قومی اسمبلی کی جانب سے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر کی گئی تھی جسے مسترد کر دیا گیاہے۔

پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی فرخ حبیب ، ملیکہ بخاری ، کنول شوزوب، جویریہ ظفر نے درخواست دائر کی تھی 

x

Check Also

بھارتی خفیہ ایجنسی را کیلئے کام کرنے والا کراچی پولیس کا ایک اور افسر گرفتار

بھارتی خفیہ ایجنسی را کیلئے کام کرنے والا کراچی پولیس کا ایک اور افسر گرفتار

بھارت کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی را کے لیے کام کرنے والے کراچی پولیس کے ...

%d bloggers like this: