dunya today

دفتر سے تنگ شہری نے 14 ہزار ڈالر سڑک پر اڑا دیے

چین میں ایک شخص نے دفتر سے بیزار ہو کر سڑک پر 14 ہزار ڈالرز اڑادیے جسے لوگوں نے فوری بٹور لیا لیکن جب اس شخص کو اپنی غلطی کا احساس ہوا تو اس نے وہی پیسے واپس مانگنا شروع کردیے۔

چین کے صوبے فوجیان کے شی شی شہر میں 42 سالہ ہوانگ نامی شہری نے بینک سے 14 ہزار سے زائد ڈالرز نکالے تھے جسے اس نے سڑک پر ٹریفک جام ہونے کے سبب غصے میں اڑا دیے جسے اردگرد موجود تمام راہ گیروں نے فوراً سمیٹ لیے۔

ہوانگ کے دفتر ساتھی بتاتے ہیں کہ اس کا یہ دن آفس میں بہت برا گزرا تھا جس کے باعث کافی الجھن اور چڑچڑاہٹ کا شکار تھا۔

پیسے اڑانے کے بعد ہوانگ کو اپنی غلطی کا احساس ہوا تو اس نے پچھتاتے ہوئے پولیس سے مطالبہ کیا کہ اسے پیسے واپس دلائے جائیں۔

حکام نے شہری کے اس عمل پر سخت تنقید کی اور کہا کہ یہ ایک غیر مناسب رویہ ہے جو آدمی کے لیے مشکل کا باعث بن گیا تھا اور اب وہ عوام سے پیسے مانگ رہا ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ہوانگ کی اپیل پر کچھ افراد نے پولیس سے رابطے کرکے اس کے پیسے لوٹا دیے ہیں۔

x

Check Also

دُلہا کی بیت الخلا میں سیلفی پر دُلہن کو انعام ملے گا

دُلہا کی بیت الخلا میں سیلفی پر دُلہن کو انعام ملے گا

بھارتی ریاست مدھیا پردیش کی حکومت نے ایک انوکھی اسکیم جاری کی ہے جس میں ...

%d bloggers like this: