فردوس جمال کی حمایت میں اُن کے بیٹے میدان میں آگئے

فردوس جمال کی حمایت میں اُن کے بیٹے میدان میں آگئے

سینئر اداکار فردوس جمال نے اداکارہ ماہرہ خان کو ’ماں‘ کا کردار کرنے کا مشورہ دیا تھا ۔ اُن کے اس بیان نے شوبز انڈسٹری میں تہلکہ مچا دیا،شوبز سے وابستہ لوگوں کی جانب سے ماہرہ خان کی بھرپور حمایت کی گئی تو فردوس جمال کے اس بیان پر اُنہیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

فردوس جمال کے بیٹے حمزہ فردوس اپنے والد کی حمایت میں میدان میں اُتر آئے۔ انہوں نے ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’فردوس جمال نے اپنی زندگی کے 45سال خون پسینہ لگا کر اور بغیر کسی سوشل میڈیا کے محنت کر کے اس انڈسٹری میں نام بنایا ہےجبکہ آج کل شہرت حاصل کرنے کے لئے سرجری،برانڈنگ اور مارکیٹنگ درکار ہوتی ہے ۔‘

انہوں نے اپنے والد کے حمایتی پیغام میں لکھا کہ اُنہیں کسی سے حسد یا بغض کی ضرورت نہیں وہ اپنے کام سے خود کو منوا چکے ہیں ۔

فردوس جمال کے اس بیان کے بعد سے اُن کو عورت مخالف بھی کہا جارہا ہےتاہم اُن کے بیٹے نے ان تمام باتوں کی تردید کرتے ہوئے لکھا کہ اگر وہ عورت مخالف ہوتے تو وہ اسی پروگرام میں دیگر اداکاراؤں  بشمول ثانیہ سعید ، صبا قمر اور مہو ش حیات کو نہ سراہتے۔

جس پروگرام میں فردوس جمال نے ماہرہ سے متعلق بات کی اُن کے بیٹے حمزہ فردوس بھی اُن کے ساتھ موجود تھے، انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں واضح کیا کہ انہوں نے خود ماہرہ خان کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا کہ ماہرہ خان ہماری انڈسٹری کا ایک بڑا نام ہیں اور وہ بین الاقوامی سطح پر ملک کی نمائندگی کرتی ہیں ۔

حمزہ فردوس نے اپنے ٹوئٹ میں ماہرہ خان کی نئی آنے والی فلم کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا  

دوسری جانب اداکار فردوس جمال کا اپنے بیان پر کہنا تھا کہ ’میری گفتگو کا مقصد ماہرہ خان پر تنقید کرنا نہیں بلکہ میں نے فنی صلاحیتوں کے تناظر میں بات کی،کوئی بھی میری کی ہوئی بات دل پر نہ لے۔‘

فردوس جمال نے مزیدکہا ہے کہ اگر میں 20سال کی عمر میں ضعیف کا کردار ادا کر سکتا ہوں تو اداکارہ ماہرہ خان یا دوسری اداکارائیں کیوں ماں کا کردار ادا نہیں کرسکتیں، فن میں ہر چیز کی قربانی دینی پڑتی ہے اور بڑا فنکار وہی ہے جو ہر مشکل کردار ادا کر سکے ۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی فلم انڈسری میں اداکار سنجے دت کی والدہ اداکارہ نرگس نے بھرپور جوانی میں بڑھاپے کے کردار بھی انتہائی خوبصورتی سے نبھائے جس پر اُنہیں ایوارڈز سے بھی نوازا گیا۔ میں نے دیکھا ہے کہ ہمارے ہاں اداکارائیں صرف ہیروئن کی چھاپ لگوانے کے لئے بوڑھی یا ماں کا کردار ادا نہیں کرتیں جو فن کے ساتھ زیادتی ہے ۔

انہو ں نے کہا کہ اصل فنکار وہی ہے جو کسی بھی طرح کے مشکل کردار کو اس طرح نبھائے کہ دیکھنے والوں اس کردار کو مدتوں بھلا نہ سکیں۔

متعلقہ پروگرام کے میزبان فیصل قریشی کو فردوس جمال کے الفاظ کی مذمت نہ کرنے یاجواب میں کچھ بھی نہ کہنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا جس پر فیصل قریشی نے بھی اپنے ٹوئٹس میں موقف واضح کیاہے۔

انہوں نے لکھا کہ براہ راست شو میں ایسی باتیں ہوجاتی ہیں اور میں میزبان ہونے کی وجہ سے اپنے ملک کی ثقافت اور مثبت تصویر دکھانے کی بھرپور کوشش کرتا ہوں ۔

فیصل نے مزید لکھا کہ بطور ایک ذمہ دار میزبان میں آنے والے ہفتے میں اس معاملے پر بات کروں گا۔ فردوس جمال جیسے سینئر فنکارکی بات سن کر میں بھی حیرت زدہ ہوگیا تھا۔

واضح رہے کہ 65 سالہ فردوس جمال کا شمار پاکستان کے منجھے ہوئے اداکاروں میں ہوتا ہے انہوں نے ’وارث‘، ’لنڈابازار‘ اور’پیارے افضل‘ جیسے ڈراموں اور سلسلہ، سایہ خدائے ذو الجلال جیسی فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے ہیں۔

x

Check Also

گلوکار سلمان احمد بھی 'کورونا وائرس کا شکار' ہوگئے

گلوکار سلمان احمد بھی ‘کورونا وائرس کا شکار’ ہوگئے

امریکا کے شہر نیو یارک میں موجود مشہور پاکستانی گلوکار سلمان احمد نے کہا ہے ...

%d bloggers like this: