کپتان کی معاشی ٹیم کا آخری کھلاڑی بھی آؤٹ

حکومت نے سیکرٹری خزانہ یونس ڈاگھا کو عہدے سے ہٹا دیا ہے اور انہیں اسٹیبلشمنٹ ڈویژن رپورٹ کر نے کی ہدایت کردی ہے۔
سیکرٹری کابینہ ڈویژن نوید کامران بلوچ کو سیکرٹری خزانہ لگا دیا گیا جبکہ سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی معروف افضل سیکرٹری کابینہ تعینات کر دیئے گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگا اور مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کے درمیان کچھ دنوں سے اختلافات تھے جس کے باعث سیکریٹری خزانہ نے آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات کے آخری دورمیں بھی شرکت نہیں کی تھی۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ وزارت خزانہ کے معاملات میں یونس ڈھاگا سے کوئی مشاورت نہیں کی جارہی تھی جب کہ بجٹ کی تیاری کے حوالے سے بھی مشیر خزانہ کا دفتر یونس ڈھاگا سے کوئی رہنمائی حاصل نہیں کررہا تھا۔

واضح رہےکہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے سابق وزیر خزانہ اسد عمر کو ہٹائے جانے کے بعد سے معاشی ٹیم میں تبدیلیوں کا سلسلہ جاری ہے اور اسی سلسلے میں حکومت نے گورنر اسٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر کو بھی تبدیل کیا ہے جب کہ بورڈ آف انویسٹمنٹ کے چیئرمین نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

اکیس مارچ کو وفاقی حکومت نے یونس ڈھاگہ کو سیکرٹری خزانہ تعینات کیا تھا۔ یونس ڈھاگہ کی تعیناتی کا اطلاق 22 مارچ سے ہوا تھا۔ اس سے قبل یونس ڈھاگہ 31مارچ 2017سے سیکرٹری تجارت کے عہدے پر خدمات سرانجام دے رہے تھے۔

چند روز قبل گیارہ مئی کو وفاقی حکومت نے یونس ڈھاگا کو سیکریٹری ریونیو کا اضافی چارج بھی دے دیا تھا

x

Check Also

ستمبر کے پہلے ہفتے میں تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ

ستمبر کے پہلے ہفتے میں تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ

عالمی وبا کورونا کے باعث بند تعلیمی اداروں کو ستمبر کے پہلے ہفتے میں ایس ...

%d bloggers like this: