کراچی سے بیلٹ پیپرز ملنے کا ایک اور واقعہ سامنے آگیا

کراچی کے علاقے گزری کے سرکاری اسکول سے سینکڑوں بیلٹ پیرز برآمدہوئے ہیں۔یہ بیلٹ پیپرز قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 247 اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی ایس 111 کے ہیں۔

پی پی پی رہنما اور کراچی ڈویژن کے صدر سعید غنی کا کہنا تھا کہ اسکول سے ملنے والے بیلٹ پیپرز کی تعداد 154 ہے جن میں سے 118 پر تیر کے نشان پر مہر لگی ہوئی ہے جبکہ ایک بھی بیلٹ پیپر پر بلے کے نشان کی مہر نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسکول کھلنے کے بعد بیلٹ پیپر ملے ،اس طرح بیلٹ پیپرز ملنا تشویشناک ہے جبکہ کئی بیلٹ پیپرز پر دیگر سیاسی جماعتوں کے امیدواروں کو بھی ووٹ دئیے گئے ہیں۔

ادھر بلاول بھٹو کے میڈیا کنسلٹنٹ عمر قریشی کا کہنا ہے کہ این اے 247 گزری میں سرکاری اسکول سے بیلٹ پیپرزملے ہیں بیلٹ پیپرزپر تیر کے نشان پر ٹھپہ لگا ہوا ہے ۔

واضح رہے کہ چند روز پہلے بھی قیوم آباد کے علاقے میں کچرا کنڈی سے بیلٹ پیپرز برآمد ہوئے تھے جنہیں آگ لگائی گئی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: