نگران وزرائے اعلیٰ کے اثاثہ جات کی تفصیلات سامنے آگئیں

 دستاویزات کے مطابق  نگران وزیراعلیٰ سندھ فضل الرحمان دیگر صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کے مقابلے میں سب سے زیادہ امیر ہیں جب کہ غریب ترین نگران وزیراعلیٰ بلوچستان علاؤ الدین مری ہیں۔

سندھ کے نگران وزیراعلیٰ ‎فضل الرحمان کے 13 کروڑ 55 لاکھ 75 ہزار روپے سے زائد کے اثاثوں کے مالک ہیں اور ان کے پاس پینشن فنڈز کی مد میں 80 لاکھ روپے موجود ہیں۔

دستاویزات کے مطابق نگران وزیراعلیٰ سندھ 400 گرام سونے کے مالک ہیں اور ان کی اہلیہ نے 5 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔

دستاویزات میں بتایا گیا ہے کہ نگران وزیراعلیٰ سندھ کے پاس نقد رقم 2 لاکھ روپے ہیں اور ان کے بینک بیلنس میں 2 کروڑ 62 لاکھ 86 ہزار سے زائد رقم موجود ہے۔

نگران وزیراعلیٰ سندھ فضل الرحمان نے 5 لاکھ روپے کا فرنیچر ظاہر کیا اور ان کے 7 پلاٹ اپنے اور 3 پلاٹ اہلیہ کے نام پر ہیں جب کہ ان کے پاس 1967 ماڈل کی گاڑی بھی ہے جس کی مالیت 15 ہزار روپے ظاہر کی گئی ہے۔

نگران وزیراعلیٰ بلوچستان علاؤالدین مری کے اثاثوں کی کل مالیت 48 لاکھ 90 ہزار روپے ہے جن کے کوئٹہ میں گھر کی مالیت 21 لاکھ 60 ہزار، کراچی میں گھر کی مالیت 7 لاکھ روپے اور گوادر میں پلاٹ کی قیمت 14 لاکھ روپے ظاہر کی گئی ہے۔

علاؤ الدین مری کے پاس بینک میں ایک لاکھ روپے ہیں اور انہوں نے کاروبار میں سرمایہ کاری 35 لاکھ روپے ظاہر کی ہے۔

دستاویزات کے مطابق ‎نگران وزیراعلیٰ بلوچستان نے 50 ہزار روپے کا فرنیچر ظاہر کیا ہے۔

خیبرپختونخوا کے نگران وزیراعلیٰ جسٹس (ر) دوست محمد خان کے اثاثوں کی مالیت 4 کروڑ 71 لاکھ 50 ہزار سے زائد ہے، انہوں نے اسلام آباد میں 8 مرلے کے گھر کی مالیت 2 کروڑ 97 لاکھ، اسلام آباد میں 7 مرلے کے پلاٹ کی مالیت 15 لاکھ 25 ہزار اور پشاور میں 2 کنال اراضی کی قیمت 8 لاکھ 63 ہزار سے زائد ظاہر کی ہے۔

‎اثاثوں کی تفصیلات کے مطابق دوست محمد خان کے نام پر کوئی گاڑی نہیں، ان کے بینک اکاؤنٹ میں ایک کروڑ 27 لاکھ 56 ہزار 601 روپے موجود ہیں اور ان کے پاس 35 لاکھ روپے نقد رقم موجود ہے۔

پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ پروفیسر حسن عسکری کے اثاثوں کی کل مالیت 2 کروڑ 4 لاکھ 84 ہزار روپے سے زاِئد ہے اور انہوں نے بینک اکاؤنٹ میں ایک کروڑ 15 لاکھ 53 ہزار روپے سے زائد رقم ظاہر کی ہے۔

حسن عسکری نے دستاویزات میں 2013 ماڈل کی گاڑی کی مالیت 10 لاکھ روپے ظاہر کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: