اگر عمران خان تیسری شادی نہ کرتے تو میں پارٹی میں ہوتا

پاکستان تحریک انصاف چھوڑنے والے میاں احمد رضا مانیکا نے پارٹی چھوڑنے کی وجہ بیان کرتے ہوئے کہاہے کہ شادی کرنا ہر آدمی کا ذاتی فعل ہے ، کئی لوگوں اور لیڈروں نے ایک سے زائد شادیاں کی ہیں لیکن ان کے میڈیا ٹرائل نہیں ہوئے لیکن عمران خان کا بنا ہے ، یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے لیکن عام آدمی ان کے فیصلے سے ناخوش ہے ، پاکپتن صوفیا کرام کی نگری ہے یہاں پیروں کا بہت احترام ہوتاہے اور جو لوگ پیر کے احترام میں اپنی حدود پھلانگتے ہیں ان کو لوگ یہاں اچھا نہیں سمجھتے ہیں ۔
نجی ٹی وی جیونیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے احمد رضا مانیکا کا کہناتھا کہ اگر عمران خان تیسری شادی نہ کرتے تو میں پارٹی میں ہوتا کیونکہ میں نے پارٹی کیلئے بہت کام کیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے 2013 میں پارٹی جوائن کی تھی اور مجھے الیکشن میں 56 ہزار سے زائد ووٹ ملے ، میں جماعت کے ساتھ مخلص ہو کر چلتا رہا ہوں ، ہم نے پاکپتن کے ضلع کے چیئرمین کا الیکشن جیتاہے لیکن عمران خان نے ہمارے پر کبھی توجہ نہیں دی ، میں یہاں پر پارٹی کا ڈسٹرکٹ پریذیڈنٹ بھی ہوں ، وہ یہاں آتے تھے اور ہم سے ملے بغیر ہی چلے جاتے تھے اور کبھی سیاسی حالات پر ہم سے کوئی گفتگو نہیں کی ۔ ان کا کہناتھا کہ ورکرز مجھ سے پوچھتے تھے کہ عمران خان آئے اور ملے بغیر ہی چلے گئے ہیں جس پر مجھے شرمندگی محسوس ہو تی تھی ۔ان کا کہناتھا کہ عمران خان میں کچھ عرصہ میں بہت تبدیلی آئی ہے جب جسٹس وجیہہ الدین نے پارٹی چھوڑنے کا اعلان کیا تو وہ بھی اس وقت انہوں نے بھی یہی کہا تھا کہ مجھے پرانا والا عمران خان چاہیے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: