کشمیر میں کشیدہ صورت حال کی ذمہ دار مودی سرکار ہے،راہول گاندھی

کانگریس کے سربراہ راہول گاندھی نے مقبوضہ کشمیر میں کشیدہ صورت حال کا ذمہ دار مودی سرکار کو قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر مسئلے کا واحد حل بات چیت کے ذریعے ہی ممکن ہے ۔

سنگاپور میں نیشنل یونیورسٹی میں پبلک پالیسی سے متعلق مباحثے کے دوران راہول گاندھی کا کہنا تھا کہ کشمیر کے حوالے سے مودی سرکار کی پالیسی مفاہمت کے بجائے مخاصمت پر مبنی ہے،یہی وجہ ہے کہ وادی میں صورت حال بگڑتی جارہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ سال 2004 میں جب یوپی اے نے مرکز میں حکومت بنائی تو کشمیرجل رہا تھا لیکن سابق وزیراعظم من موہن سنگھ کی سربراہی میں کشمیر کے بارے میں مفاہمانہ پالیسی اپنائی گئی اوریہی وجہ تھی کہ وہاں حالات میں بہتری آئی ۔

انہوں نے کہاکہ وادی کے حالات میں بہتری لانے اور کشمیر مسئلے کو حل کرنے کے لیے اعتمادسازی اور بات چیت ناگزیر ہے ۔۔

انہوں نے مودی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ پولیس تک کو کنٹرول کرتے ہیں اور بہت ہی جارحانہ قسم کی سیاست کی جارہی ہے ۔۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں وہ مودی کو شکست دیں گے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: