Raped Voices and the foil of Religion

A 17 years old christian girl was gang-raped in Kasur for not converting to Islam, according to a statement issued by a renowned Christian NGO.

The accused had 20 years old brother of the raped victim sitting in the next room during the rape, The British Pakistani Christian Association of Pakistan added.

“They forced him to listen to the cries of his sister.  The extremists had weapons. iron rods and daggers. They surrounded the home of the victims and threatened them to convert which they refused.

Arif, 20 and Jameela, 17, were kidnapped and were moved to a hide-out. They raped the girl and made the brother listen to her cries. Next morning Arif get  free from the kidnappers but his sister is still missing. The family contacted the Police but they didn’t filed the case.

“We are trying to rescue the family both morally and financially because Jameela will remain a missing person like many others”, Chaudhary Wilson the Chairman of The British Pakistani Christian Association of Pakistan told media.

The rape of the Christian and the Hindu girls is a matter of routine in these areas because the state is not providing any security to the minorities, He added.

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Check Also

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا۔ ملزم مذاق کے نام پر خواتین کو مختلف باتوں پر ہراساں کرتا تھا اور گزشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر اس پر خوب تنقید کی جارہی تھی اور پولیس سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ملزم پر خواتین سے غیراخلاقی حرکات ، اسلحہ کے زورپرگالم گلوچ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ گوجرانوالہ پولیس نے لاہور کے علاقے محمود بوٹی میں کارروائی کرکے ملزم محمد علی کو گرفتار کرلیا۔ ملزم گکھڑ منڈی کا رہائشی ہے جس نے سوشل میڈیاپر اپنا چینل بنارکھا ہے ۔ ایس پی صدر عبدالوہاب کےمطابق ملزم مزاحیہ ویڈیوز کے ذریعے شہرت حاصل کرنے کے لیے مختلف عوامی مقامات اور پارکس میں بیٹھی خواتین کو ہراساں کرکے ان کی تذلیل کرتا اور ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیتا تھا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف مقامی شہری کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

مزاحیہ ویڈیو کے نام پر خواتین کو ہراساں کرنے والا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ پولیس نےبغیراجازت عوامی مقامات پر ویڈیوز بناکر خواتین کرہراساں کرنے کے الزام میں ایک ...

%d bloggers like this: