الطاف حسین کا ٹرائل یکم جون 2020 کو شروع ہوگا

الطاف حسین کا ٹرائل یکم جون 2020 کو شروع ہوگا

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے بانی الطاف حسین کے خلاف نفرت انگیز  تقاریر کے الزام میں ٹرائل کا آغاز یکم جون سے ہوگا۔

بانی ایم کیو ایم کو 6 ہفتے قبل ویسٹ منسٹر کورٹ میں دہشت گردی کی دفعات پر چارج کیا گیا تھا جس کے بعد بانی ایم کیو ایم کو ضمانت پر  رہا کر دیا گیا۔

بانی ایم کیو ایم کے خلاف لندن کی اولڈ بیلی کراؤن کورٹ میں کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران الطاف حسین کو ایک بار پھر دفعات پڑھ کر سنائی گئیں۔

بانی ایم کیو ایم کے خلاف مقدمے کا ٹرائل  اولڈ بیلی کراؤن کورٹ میں آئندہ برس یکم جون سے شروع ہوگا۔

واضح رہےکہ بانی ایم کیو ایم پر 22 اگست 2016 کو تقریر کے ذریعے لوگوں کو تشدد پر اکسانے کا الزام ہے۔

لندن پولیس نے انہیں رواں برس 11 جون کو نفرت انگیز تقریر کے الزام میں گرفتار کیا تھا جس کے بعد تین مرتبہ ان کو ضمانت ملی۔ 

بانی ایم کیو ایم کو تیسری مرتبہ ضمانت 11 اکتوبر ملی جب  وہ لندن کے سدک پولیس اسٹیشن میں پیش ہوئے لیکن پولیس کے سوالوں کے جوابات نہیں دیے جس پر انہیں اسی دن حراست میں لیا گیا تھا۔ 

تاہم، بعد ازاں اسی دن ویسٹ منسٹر مجسٹریٹس کورٹ نے بانی ایم کیو ایم کو مشروط ضمانت دی تھی۔

x

Check Also

آرمی چیف کی دوسری مدت سے دو دن پہلے فوج میں اہم تبدیلیاں

بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے دوسرے دور ملازمت شروع ہونے ...

%d bloggers like this: