پاکستان فروری تک گرے لسٹ میں رہے گا، ایف اے ٹی ایف

ناکافی اقدامات، پاکستان گرے لسٹ میں ہی رہے گا

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس( ایف اے ٹی ایف ) نےپاکستان کوآئندہ سال فروری تک گرے لسٹ میں رکھنے کا علان کردیا۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے اجلاس کے بعد پاکستان کو فروری تک گرےلسٹ میں رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

حالیہ اجلاس میں چین نے پاکستان کی بھر پور مدد کی جبکہ بھارت کی پوری کوشش رہی کہ پاکستان کو بلیک لسٹ میں ڈالا جائے۔

وفاقی وزیر اقتصادی امور حماد اظہر نے بہترین انداز میں پاکستان کو موقف پیش کیا تاہم ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو فروری تک مقرر ہدف پورا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے فروری تک کی مہلت دے دی ہے۔

ایف اے ٹی ایف کے صدر کا کہنا ہے کہ پاکستان بدستور گرے لسٹ میں ہے، معاملات مزید بہتر کرنے کے لئے پاکستان کو فروری 2020 تک کا وقت دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں نئی حکومت کے آنے کے بعد منی لانڈرنگ اور ٹیرر فانانسگ کے خلاف پیش رفت ہوئی ہے ،ایف اے ٹی ایف اس پیش رفت کا خیر مقدم کرتا ہے مگر اب بھی زیادہ تر اہداف پر عمل درآمد ہونا باقی ہے ۔

واضح رہے کہ فرانس کے دارالحکومت پیرس میں ہونے والےفنانشل ایکشن ٹاسک فورس( ایف اے ٹی ایف ) کے اجلاس کا آج آخری روز تھا جس کی قیادت وفاقی وزیر اقتصادی امور حماد اظہر نے کی، اس کے علاوہ اجلاس میں پاکستان کے 5 رکنی وفد نے شرکت کی تھی۔

x

Check Also

حکومت کا عدالتی جنگ شروع کرنے کا فیصلہ

وزیراعظم عمران خان نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کی کور کمیٹی کے ...

%d bloggers like this: