آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار متعارف

آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار متعارف

لگژری گاڑیاں بنانے والی جرمن کمپنی ’رولس-روائس‘ نے آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار’ویژن 100‘ متعارف کرا دی۔

گاڑی کو باہر سے دیکھنے کے بعد کوئی بھی اس گاڑی کے جدید فیچرز کا اندازہ با آسانی لگا سکتا ہے جس کی بناوٹ تمام گاڑیوں سے بے حد مختلف ہے۔

آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار متعارف

گاڑی میں سامان رکھنے کے لیے جدید طرز کا ’لگیج سیکشن‘ الگ سے موجود ہے جو کہ سامان تک رسائی حاصل کرنے میں بے حد مدد گار ہو گا۔

آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار متعارف

رولس-رائس کی یہ گاڑی مکمل طور پر خود کار ہے جو کہ آواز کی مدد سے سارے کام سر انجام دے گی، گاڑی میں رہنمائی کے لیے ایک ورچوئل اسسٹنٹ بھی موجود ہے۔

گاڑی کے ٹائر 25 انچ کے 65 المونیم کے ٹکڑوں سے ڈھکے ہوئے ہیں جو کہ اسے دوسری گاڑیوں سے منفرد بناتے ہیں۔

آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے ذریعے چلنے والی لگژری کار متعارف

گاڑی بنانے والی کمپنی کے مالک کا کہنا ہے کہ ہمارا مقصد اور ہمارا وژن آج اس گاڑی کی شکل میں سب کے سامنے ہے اور یہ آسائش کی نقل و حرکت کا مستقبل ہے۔

x

Check Also

لاہور: نوجوان نے ایک وینٹیلیٹر سے دو مریضوں کو آکسیجن دینے والا پرزہ بنا لیا

نوجوان نے ایک وینٹیلیٹر سے دو مریضوں کو آکسیجن دینے والا پرزہ بنا لیا

لاہور کے ایک نوجوان پلاسٹک فیکٹری مالک اسامہ عثمان نے ایک وینٹیلیٹر سے دو مریضوں ...

%d bloggers like this: