نجم سیٹھی کے لیجنڈ کرکٹرزپر الزامات

نوازشریف حکومت کے منظور نظر سابق چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی نے نجی ٹی وی چینل  کو انٹرویو میں سابق لیجنڈ کرکٹرز پر الزامات کی بچھاڑ کر دی۔ نجم سیٹھی  نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ 35پنکچر کے الزام کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ آنے پر پچھتاوے کا اظہار کرتے ہوئے عہدہ چھوڑنے کی آفر کی جس پراس وقت کے وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ  عہدہ نہ چھوڑیں اب یہ ہمارا مسئلہ ہے۔۔ انہوں نے کہا کہ کرکٹ میں نوکریوں کے لیے لاہور اور کراچی میں تعصب پایا جاتا ہے۔

پی سی بی کے معاملات اور سابق کرکٹرز کے رویے پر بات کرتے ہوئے نجم سیٹھی نے کہا کہ کرکٹ کمیٹی میں سفارشی ٹولہ بیٹھا ہے۔راشدلطیف نے چیف سلیکٹر کی آفر پر کہا اینٹی کرپشن کا ہیڈ بنائیں لیکن انہیں دانش کنیریا کی حمایت پر عہدہ نہیں دیا۔وقار یونس کو اختلافات کے باوجود چیف سلیکٹر کا عہدہ دیا لیکن وہ بہتر پرفارمنس نہ دے سکے اب وہ مجھ پر تنقید کرتے ہیں۔

محسن خان اورمایہ ناز باؤلر وسیم اکرم کے بارے میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ محسن خان نے کہا مجھے کوچ یا سلیکٹر بنائیں تو لوگوں نے منع کیا۔محسن خان وسیم اکرم کو آٹھ سال گالیاں دیتے رہے اور اب انکے ساتھ بیٹھے ہیں

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

بورڈ میں موقع ملا تو ضرور کام کروں گا، یونس خان

بورڈ میں موقع ملا تو ضرور کام کروں گا، یونس خان

سابق ٹیسٹ کرکٹر یونس خان کا کہنا ہے کہ بورڈ میں موقع ملا تو ضرور ...