سہاقہا اشتہاری ہو گیا

عمران خان کے سکواڈ میں شامل گاڑی کی ٹکر سے موٹر سائیکل سوار نوجوان جاں بحق

اکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی قیادت میں لاہور میں ممبر سازی مہم جاری ہے جس دوران کپتان کے سکواڈ کی گاڑی کی ٹکر سے ایک  موٹر سائیکل سوار نوجوان جاں بحق ہو گیا ہے ۔
نجی ٹی وی چینل ’’ 24 نیوز‘‘  کے مطابق عمران خان نے آج لاہور کے سات مختلف مقامات پر ’’ ممبر سازی مہم ‘‘ کے سلسلہ میں بڑے اجتماعات اور ریلیوں سے خطاب کرنا ہے جبکہ اس سے قبل وہ ایک بڑے قافلے کے ہمراہ کئی مقامات پر خطاب کر چکے ہیں ،اسی سلسلہ میں  عمران خان نے سگیاں پل پر خطاب کیا اور اس کے بعد یہ افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے ، جاں بحق ہونے والے شہری کی شناخت عدنان کے نام سے ہوئی ہے اور وہ  عمران خان کے قافلے کے ساتھ موٹر سائیکل پر سوار تھا جو کہ ٹکر کی صورت میں شدید زخمی ہو ا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے  موقع پردم توڑ گیاہے ۔نجی ٹی وی کا کہناہے کہ جاں بحق ہونے والا نوجوان عدنان لاہور کے نواحی علاقے رچنا ٹاﺅن فیروز والا کا رہائشی تھا ۔اس سے قبل لاہور کے مختلف مقامات پر خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ ن لیگ والے سینیٹ میں ہار گئے تو کہہ رہے ہیں کہ پیسہ چل رہا ہے، تین سال پہلے ہم نے کہا تھا کہ انتخابات میں پیسہ چلتا ہے قانون بدلیں، اس وقت انہوں نے کچھ نہیں کیا،مسلم لیگ ن نے منی لانڈرنگ کی کھلی چھوٹ دے رکھی ہے، اورنج لائن ٹرین اور میٹرو جیسے منصوبوں کا مقصد اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کر کے پیسہ بیرون ملک لے جانا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

سپریم کورٹ آف پاکستان میںسی ڈی اے میں ڈیپوٹیشن پر آئے افسران سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار اور وکیل نعیم بخاری کے درمیان دلچسپ مکالمہ ہوا ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ٹی وی پر بیٹھ کر آپ بھی بہت باتیں کرتے ہیں، عدلیہ پر جائز تنقید کرنی چاہیے، جائز تنقید سے ہماری اصلاح ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ روز کسی نے چیف جسٹس پاکستان کے کراچی میں لگے اشتہارات کےبارے میں بات کی، ان کو یہ نہیں معلوم میں نے خود وہ اشتہارات ہٹانے کا حکم دے رکھا ہے،اگرمیں آج پابندی لگادوں تو بہت سے لوگوں کا کام بند ہوجائےگا۔ نعیم بخاری نے کہا کہ جوڈیشل مارشل لاء کےبارے میں بہت سی باتیں ہو رہی ہیں۔ چیف جسٹس نے ان سے سوال کیا کہ جوڈیشل این آر او کیا ہوتا ہے؟ میں واضح کردوں، کچھ نہیں آرہا، ملک میں نہ جوڈیشل این آر او اور نہ ہی جوڈیشل مارشل آرہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں صرف آئین رہے گا، باقی کچھ نہیں ہوگا، ملک میں صرف جمہوریت ہوگی باقی کچھ نہیں رہے گا۔ چیف جسٹس نے یہ بھی کہا کہ اگرمیں یہ کہہ دوں کچھ نہیں آرہا تو کئی لوگوں کے ٹی وی پروگرام بند ہو جائیں گے۔

ٹی وی پر بیٹھ کر آپ بہت باتیں کرتے ہیں، چیف جسٹس

سپریم کورٹ آف پاکستان میںسی ڈی اے میں ڈیپوٹیشن پر آئے افسران سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان ...