سب ملی بھگت ہے عدالتی حکم پر عمل نہیں ہوتا، چیف جسٹس

چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ سب ملی بھگت ہےعدالتی حکم پرعمل نہیں ہوتا ہے، اب انتظامیہ ہو یا کوئی اور سب کو ہمارے حکم پر عمل کرنا ہوگا۔
سپریم کورٹ میں درختوں کی کٹائی سےمتعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے موقع پر مائننگ ڈپارٹمنٹ پنجاب کے چیف انسپکٹر سے ایک گھنٹے میں 15روز کی کارکردگی رپورٹ طلب کی گئی۔
چیف جسٹس ثاقب نثار نے مزید کہا کہ عدالت کے متحرک ہونے کے بعد سب متحرک ہوجاتے ہیں ہم کب تک وعدے کریں گے؟کب تک لوگ ہمیں ہمارے وعدے یاد کروائیں گے؟
چیف جسٹس نے کہا کہ سال 2018میں سپریم کورٹ کا مقصد صحت اور تعلیم ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

اگر یہ بات ہے تو میں استعفیٰ دے دیتا ہوں “ اسد عمر

اگر یہ بات ہے تو میں استعفیٰ دے دیتا ہوں ،اسد عمر

نجی ٹی وی جیونیوز کے صحافی ارشد وحید چوہدری نے دعویٰ کیاہے کہ جہانگیر ترین ...